وَبِصَوْمِ غَدٍ نَّوَيْتُ مِنْ شَهْرِ رَمَضَانَ.
I Intend to keep the fast for month of Ramadan

ضرورت اصلیہ جن پر زکوٰۃ نہیں

Islamic Q&A
ضرورت اصلیہ جن پر زکوٰۃ نہیں

کتاب و سنت کی روشنی میں

سوال:ضرورت اصلیہ سے کیا مراد ہے؟

جواب:ضرورت اصلیہ سے مراد وہ بنیادی ضرورتیں ہیں جن پر آدمی کی زندگی اور عزت و آبرو کا دارومدار ہے۔ جیسے کھانا، پینا، لباس، جوتے وغیرہ، رہنے کا مکان، پیشہ ور آدمی کے اوزار اور مشینیں وغیرہ، سواری کا گھوڑا، سائیکل، موٹر سائیکل، موٹرکار، جو تعیش کے زمرے میں نہ آتی ہو وغیرہ، گھر داری کا سامان، کتابیں جو مطالعے کے لئے ہوں، کاروبار یا دکھاوے کی غرض سے نہ ہوں۔ یہ ساری چیزیں ضرورت اصلیہ میں شمار ہوں گی۔ ان پر زکوٰۃ واجب نہ ہوگی۔ اور اسی طرح ان میں سے کسی چیز پر کوئی ٹیکس نہیں لگایا جا سکتا البتہ ان سے زائد مال بقدر نصاب ہو (یعنی اس کی مالیت ساڑھے سات تولے سونے کی مالیت کے برابر ہو) تو اس پر زکوٰۃ واجب ہوگی جبکہ دوسری شرائط بھی موجود ہوں۔